اسلام

اولاد کی نافرمانی کے وجوہات. تحریر بشارت حسین @Emerging_PAK_B

اولاد کی نافرمانی کی وجوہات

پیدائشی طور پر ایک بچہ معصوم اور بےگناہ پیدا ہوتا اس میں اسکی پیدائش کی نہ کوئی غلطی ہوتی ہے نہ گناہ وہ اللہ کی مرضی سے اس دنیا میں آتا ہے پھر خواہ اس کے آنے کا سبب حلال ہو یا حرام۔
جب دنیا میں بچہ قدم رکھ لیتا ہے تو پھر کچھ اسباب ایسے ہوتے ہیں جو اس کے اخلاق اور کردار کے بنانے یا بگاڑنے کا سبب بنتے ہیں۔
آئیے ان اسباب و کارفرما امور کا جائزہ لیتے ہیں۔

انسان کی کمائی اور اس کے اثرات
جب بچہ دنیا میں آتا ہے تو اس کا رزق اس کی ماں سے منسلک ہوتا ہے ہے وہ اپنی ماں کا دودھ پیتا ہے یا کسی بیماری کیوجہ سے وہ اپنا دودھ نہیں پلا سکتی تو اس کو باہر سے دودھ پلایا جاتا بازار سے خرید کر۔ اب یہ والدہ کا ہو یا بازار سے لایا جا رہا ہو اس میں جو پیسہ صرف ہو گا اس پہ انحصار ہے اس بچے کے کردار کا۔
اب اگر بچے کے والدین کے کمائی کے ذریعے غلط ہیں جو کہ اسلام میں حرام ہیں تو اس کے نتائج بھی ایسے ہی ہونگے۔
اگر بچے کو حرام کی کمائی سے کھلایا پلایا جا رہا ہے تو اس بچے کے خون میں بغاوت اور بگاڑ پیدا ہونا فطری عمل ہے۔
اسلام اس چیز کی بار بار تاکید کرتا ہے کہ خود بھی حلال کھاو اور اپنے بچوں کو بھی حلال کھلاو۔

بچے کی تربیت
بچے کی تربیت اس کے کردار کی دوسری اور سب سے اہم بنیاد ہے۔
کہتے ہیں ماں کی گود بچے کی سب سے پہلی درسگاہ ہوتی ہے وہاں سے سیکھا ہوا سبق وہ کبھی نہیں بھولتا۔
بچے کی پرورش کرتے وقت اسکی ہر خواہش کو پورا کرنا اچھی تربیت نہیں بلکہ اچھی تربیت تو یہ ہے کہ اس کے اندر اچھے اخلاق پیدا کیے جائیں اس کے بول چال میں نرمی پیدا کی جائے عموما دیکھا گیا ہے جس گھر میں اونچا بولنے اور مار پیٹ کا رحجان ہو عورتوں پہ ہاتھ اٹھایا جاتا ہو وہاں بچے کے اندر بھی ایسی ہی بڑی خصلتیں جنم لیتی ہیں۔
والدین ہمیشہ بچے سے آرام سے بات کریں نرم لہجے میں سمجھائیں بچے کی ہر ضد پوری نہ کی جائے بلکہ اس کو احسن طریقے سے سے ٹالا بھی جائے لیکن اس میں جھوٹ کا قطعی سہارا نہ لیا جائے۔
بچے کی بات کو غور سے سنا جائے اس کی بڑی عادات کو ختم کرنے کیلئے اس کے نقصانات کو سمجھایا جائے۔
بچے کو اچھی تعلیم دی جائے اچھے ماحول میں رکھا جائے اس کے ساتھ ملنے جلنے والوں پہ بھی نظر رکھنی چاہیے۔
بچے کی صحبت (یعنی اس کا اٹھنا بیٹھنا)
بچے کی صحبت کا ہمیشہ سے خیال رکھا جائے بچے کا ساتھ دوستانہ ماحول رکھیں تاکہ بچہ اپنے دوستوں کے بارے میں آگاہ رکھے۔
یہ خیال رکھنا ضروری ہے کہ بچے کی صحبت بڑوں کے ساتھ تو نہیں یا اوباش لڑکوں کے ساتھ تو نہیں، کہیں وہ نشہ کرنے والوں کے ساتھ تو نہیں اٹھتا بیٹھتا۔
یاد رہے کہ بچے کی عزت نفس کا ہر جگہ خیال رکھا جائے خواہ وہ گھر ہو یا دوستوں میں۔
بچے کا سامنے گھر میں ہمیشہ صاف ستھرے الفاظ کا استعمال کریں۔
اپنے اللہ سے انکی کامیابی اور اچھے اخلاق کی دعا مانگیں انکا احترام کریں کبھی بھی بچہ نافرمان نہیں ہو گا
ان شاء اللہ
اللہ ہر بچے کو اپنے والدین کی آنکھوں کی ٹھنڈک بنائے
آمین یا رب العالمین
Writer
Basharat Hussain Ayub

https://twitter.com/Emerging_PAK_B?s=09

فالو کریں
میگزین at Jabbli Views
جبلی ویوز ایک میگزین ویب سائٹ ہے، یہ ایک ایسا ادارہ ہے جس کا مضمون نگاری اور کالم نگاری کو فروغ دینا اور اس شعبے سے منسلک ہونے والے نئے چہروں کو ایک پلیٹ فارم مہیا کرنا ہے،تاکہ وہ اپنے ہنر کو نکھار سکیں اور اپنے خیالات دوسروں تک پہنچا سکیں۔
Jabbli Views
فالو کریں

Jabbli Views

جبلی ویوز ایک میگزین ویب سائٹ ہے، یہ ایک ایسا ادارہ ہے جس کا مضمون نگاری اور کالم نگاری کو فروغ دینا اور اس شعبے سے منسلک ہونے والے نئے چہروں کو ایک پلیٹ فارم مہیا کرنا ہے،تاکہ وہ اپنے ہنر کو نکھار سکیں اور اپنے خیالات دوسروں تک پہنچا سکیں۔

اپنے خیالات کا اظہار کریں