تازہ ترین

عائشہ اکرم اور ریمبو ایکسپوز ہونے کے بعد ساجد عثمانی کا تبصرہ سخت کاروائی کا مطالبہ

ریمبو اور عائشہ اکرام کو سخت سزا دی جائے!

اقرار الحسن نے اس وقت جو کیا وہ کسی حد تک درست تھا کہ جو کچھ بادی النظر میں نظر آتا تھا وہ اچھا نہیں تھا۔

لیکن اقرار الحسن نے پوری پاکستانی قوم کے مردوں کے لئے جس قدر گھٹیا اور لاؤڈ الفاظ استعمال کئے جس طرح اپنے بیان کو exaggerate کیا وہ قطعی طور پر مناسب نہیں تھا، ٹی وی اینکرز اور اخباری نمائندے وغیرہ الفاظ کے استعمال سے اچھی طرح واقف ہوتے ہیں اور ان کو الفاظ کی شدت کا بھی اندازہ ہوتا ہے کہ کب کہاں کیا بولنا ہے کب بولنا ہے اور کتنا بولنا ہے۔

لیکن اس کے باوجود انہوں نے پاکستانی معاشرے اور مردوں کے لئے جو گھٹیا اور شرمناک الفاظ استعمال کئے وہ کسی طور قابل قبول نہیں تھے۔

آپ خود بھی پاکستانی ہیں، پاکستانی میڈیا پر کام کرتے ہیں، لاکھوں پاکستانی آپ کے ٹیم ممبرز ہیں ، پاکستان نے آپ کو نام اور عزت دی، اور آپ نے پاکستان کی عزت کی دھجیاں اڑا دیں۔ ان کے اس وقت کے بیان نے پوری دنیا کے سامنے پاکستانی مردوں کے سر شرم سے جُھکا دئے تھے۔

اقرار الحسن نے اس قدر شرمندہ کیا تھا کہ دل کرتا تھا کہ اس مرد ہونے سے بہتر ہے گھر میں دوپٹہ اوڑھ کر بیٹھ جاؤں۔


پاکستانی مردوں کو ریمبو جیسے بے غیرت کی وجہ سے بغیر کوئی گناہ کئے گھر بیٹھے گندے القابات سننے کو ملے، تمام مرد برادری کو ایک ہی ڈنڈے سے ہانکا گیا۔ سب مردوں کو کھڈے لائن لےلگادیا گیا تھا۔ یہاں تک کہا گیا کہ اپنے باپ اور بھائی کو نیک سیرت نہ سمجھیں کیونکہ آپ اسے گھر کے باہر کی عورتوں کے ساتھ برتاؤ کرتا نہیں دیکھ رہی ہیں ، اور مرد کے لئے نیک عورت عزت دار عورت صرف اپنے گھر کی عورت ہوتی ہے۔

گھر کی عورتوں اور بچیوں کی نظر میں گھر کے مردوں کی عزت دوکوڑی کی کردی گئ تھی۔
دوسری طرف عائشہ اکرام مجھے مستقل حیران کئے جارہی ہے۔ اس نے گھٹیاپن اور لُچے پن کی انتہاؤں کو چھولیا ہے۔
ابھی جب اس نے ریمبو پر الزام لگایا کہ وہ اس کو بلیک میل کرتا رہا ہے تو مجھے یقین آگیا تھا کہ واقعی ایسا ہوا ہوگا۔

مجھے اس پر بڑا ترس آیا۔ جب ریمبو نے اس پر جوابی الزام لگایا کہ یہ مجھے ملزمان سے فی کس 5 لاکھ روپے وصول کرنے کے لئے زور دے رہی تھی تو مجھے اس بات کا قطعی یقین نہیں آیا تھا اور میں نے ایک کمنٹ میں لکھا تھا کہ کیا ریمبو نے اس سے زیادہ بے سروپا اور احمقانہ الزام عائشہ اکرام پر لگاتے ہوئے سوچا

نہیں کہ بھلا اس بودے اور بے وزن الزام پر کون یقین کرے گا۔ بھلا عائشہ اکرام ایسی بات سوچ بھی کیسے سکتی ہے۔ لیجئے جناب دوسرے دن عائشہ اکرام کی ریمبو سے بات چیت کی ایک دو نہیں سات آڈیو ٹیپس آگئیں جن میں وہ واقعی ریمبو سے اس معاملے پر بات کررہی ہے۔ اور ملزمان سے پیسے وصول کرنے کا بول رہی ہے۔
سچ پوچھئے اس عورت نے مجھے شدید حیران کردیا ہے۔
ساجد عثمانی
Sajidusmani01

اپنے خیالات کا اظہار کریں