سپورٹس

پی سی بی نے سینٹرل کنٹریکٹ کا اعلان کردیا

پاکستان کرکٹ بورڈ نے سال 2022-23 کیلئے سینٹرل کنٹریکٹ کا اعلان کردیا ہے گزشتہ سالوں کی ترتیب سے ہٹ کر اس سال ٹیسٹ کرکٹرز اور سفید گیند سے کھیلنے والے کرکٹرز کو الگ الگ کنٹریکٹس دی گئی ہیں جن میں کل 33 کھلاڑی شامل ہیں قومی ٹیم کے پانچ کھلاڑی ایسے بھی ہیں جن کو ریڈ بال اور وائٹ بال دونوں کے کنٹریکٹس ملی گئیں ہوں

تفصیلات کے مطابق ریڈبال کٹیگری اے میں
بابراعظم، محمد رضوان، شاہین شاہ آفریدی، اظہر علی شامل ہیں

ریڈ بال کٹیگری بی میں حسن علی، فواد عالم شامل ہیں

ریڈ بال کٹیگری سی میں
امام الحق، عبداللہ شفیق، نسیم شاہ، نعمان علی ہیں

ریڈ بال کٹیگری ڈی میں
عابد علی، سرفراز احمد، سعود شکیل، شان مسعود، یاسرشاہ
شامل ہیں
وائٹ بال کٹیگری اے
بابر اعظم، محمد رضوان، شاداب خان، شاہین آفریدی ، فخرزمان شامل ہیں یاد رہے کپتان بابراعظم محمد رضوان اور شاہین آفریدی ریڈ بال کنٹریکٹ میں بھی اے کٹیگری میں شامل ہیں

وائٹ بال کٹیگری بی میں
امام الحق اور حارث رؤف ہیں

وائٹ بال کٹیگری سی میں
حسن علی، محمد نواز شامل ہیں

کٹیگری ڈی میںِ
آصف علی، خوشدل شاہ، حیدرعلی، وسیم جونئیر، شاہنواز دھانی، عثمان قادر، زاہدمحمود ہیں
ایمرجنگ کٹیگری میں
علی عثمان، حسیب اللہ، کامران غلام، محمد حارث، محمد ہریرہ قاسم اکرم، سلمان علی آغا شامل ہیں

تنخواہیں
اے کٹیگری میں شامل کھلاڑیوں کو بارہ لاکھ پچاس ہزار روپے ماہانہ تنخواہ ادا کیا جائےگا بی کٹیگری میں شامل کھلاڑی ماہانہ آٹھ لاکھ پچاس ہزار روپے کماسکیں گے سی کٹیگری میں شامل کھلاڑی پانچ لاکھ سے زائد روپے تنخواہ حاصل کریں گے ڈی کٹیگری والوں کو چار لاکھ جبکہ ایمرجنگ کٹیگری میں شامل کھلاڑی اڑھائی لاکھ ماہانہ تنخواہ حاصل کریں گے یاد رہے جن کھلاڑیوں کو ریڈ بال اور وائٹ بال کے دونوں کنٹریکٹس ملے ہیں وہ ڈبل تنخواہ پائیں گے

اس کے علاوہ میچ فیس میں بھی دس فیصد اضافہ کیا گیا ہے جس کے بعد ایک ٹیسٹ میچ فیس ساڑھے آٹھ لاکھ روپے ہوں گے اور ایک روزہ میچ کی فیس پونے چھ لاکھ ہوگی اور ٹی ٹونئٹی میچ کی فیس تقریبا چار لاکھ فی میچ ہوگی
سکواڈ میں موجود کھلاڑی جو میچ نہ کھیل رہے ہوں ان کو بھی میچ فیس کا 70 فیصد ملے گا اور کپتان کو کیپٹنسی الاؤنس بھی دیا جائے گا

رضوان احمد

Freelance journalist Twitter account https://twitter.com/real_kumrati?s=09

اپنے خیالات کا اظہار کریں