پوسٹ مارٹم

حکومت اور جنرل باجوہ پر عمران خان آگ بگولہ

سابق وزیراعظم پاکستان عمران خان جنرل باجوہ (ریٹائرڈ) اور موجودہ حکومت پر بائڈن اور مودی کی جانب سے پاکستان کو دہشتگرد ملک قرار دیئے جانے پر آگ بگولہ کھری کھری سنادیں تفصیلات کے مطابق انڈین ہندو دہشتگرد تنظیم آر ایس ایس سے تعلق رکھنے والے انتہا پسند بھارتی وزیر اعظم اور امریکی صدر جوبائڈن کی جانب سے پاکستان کو دہشتگرد قرار دئیے جانے پر ردعمل دیتے ہوئے سابق وزیراعظم پاکستان عمران خان نے کہا” جنرل باوجوہ نے پی ڈی ایم کے اپنے حواریوں ک اوے ساتھ مل کر یہ دعویٰ کیا کہ میں نے پاکستان کو بین الاقوامی طور پر تنہا کردیا ہے۔
جنرل باجوہ اور پی ڈی ایم سے ہم یہ پوچھنا چاہتے ہیں کہ حکومت کے ایک سال اور پاکستانی وزیرِخارجہ کے امریکہ کے لاتعداد دوروں کے بعد بھی بھارت-امریکہ مشترکہ اعلامیے میں پاکستان کو محض سرحد پار سے بھارت میں دہشت گردی کو ہوا دینے والے ایک کردار تک ہی محدود کردیا گیا ہے اور اس سے بڑھ کر اسے کچھ نہیں سمجھا گیا۔

کشمیر میں انسانی حقوق کی بہیمانہ خلاف ورزیوں یا بھارت میں اقلیّتوں خصوصاً مسلمانوں کے ساتھ روا رکھے جانے والے ہولناک سلوک کا کسی مناسب سے پیرائے میں ذکر تک موجود نہیں۔

لہٰذا امپورٹڈسرکار کے اس تجربے نے پاکستان کو بین الاقوامی سطح پر بالکل غیرمتعلّق ہی نہیں کردیا بلکہ ہماری جمہوریت، قانون کی حکمرانی اور (ملک کا) پورا معاشی و ادارہ جاتی ڈھانچہ ہماری آنکھوں کے سامنے بکھر رہا ہے۔”
واضح رہے پہلی مرتبہ کسی پاکستانی وزیر اعظم نے بین الاقوامی فارم پر عمران خان نے ہی مودی کا دہشتگرد چہرہ بے نقاب کیا تھا جس کے بعد بی جی پی کے ورکرز بھی اس بات کو مان گئے ہیں کہ ان کا تعلق دہشت گرد تنظیم آر ایس ایس سے ہے لیکن 40 سے زیادہ دوروں کے باوجود وزیر خارجہ بلاول بھٹو وہ کمال نہیں کرپائے جو خان نے صرف ایک تقریر سے کیا تھا

رضوان احمد

Freelance journalist Twitter account https://twitter.com/real_kumrati?s=09

اپنے خیالات کا اظہار کریں