اہم قومی خبریںبین الاقوامی

روسی تیل کے بعد روسی گیس ؟ بڑی خبر سامنے آگئ

روسی گیس بھی پاکستان پہنچ گئی

ایکسپریس ٹریبون کےمطابق تورخم کے راستے 10 ٹرکس 1 لاکھ 10 ہزار ٹن ایل پی جی لائے ہیں۔ یہ گیس روس سے ازبکستان تک ٹرین میں لائی گئی۔ اور پھر وہاں سے ٹرکوں پر منتقل کرکے پاکستان لائی گئی۔ پاکستان سالانہ 7 لاکھ ٹن ایل پی جی درآمد کرتا ہے قطر اور ایران کے بعد روس ایک بہتر آپشن میسر آیا ہے۔ اس سے پہلے گزشتہ ہفتے روس سے ہی پہلا تیل بردار بحری جہاز کراچی بندرگاہ پہنچا تھا۔ جو 3 لاکھ 30 ہزار بیرل سے بھرا ہوا تھا۔ یہ تیل سرکاری ریفائنری میں ریفائن کیا جاےگا اور پھر طےہوگا کہ کس قیمت پر فروخت کیاجاے کیونکہ بحری جہاز 26 دن کا سفر طے کرکے پاکستان پہنچا تھا۔ پاکستان گلف ممالک سے یومیہ 1 لاکھ 54 ہزار بیرل تیل درآمد کرتا ہے۔ پلان ہے کہ روس سے یومیہ 1 لاکھ جبکہ گلف ممالک سے 54 ہزار بیرل منگوا کر قیمتوں میں کمی کی جاے۔

پاکستان آبادی کے لحاظ سے دنیا کا پانچواں بڑا ملک ہے۔ اپنی توانائی کی ضروریات پوری کرنے کے لئے 84 فیصد توانائی درآمد کرتا ہے۔ ایسے میں جب گلف ممالک پاکستان کو ڈیفرڈ پیمنٹ پر تیل مہیا کرتے ہیں جبکہ روپے کو مستحکم کرنے کے لئے 2 سے 3 ارب ڈالر بھی مرکزی بینک میں رکھواتے ہیں۔ ایسے میں حکومت کا روس سے تیل و گیس خرید کر قیمتیں کم کرنا کسی چیلنج سے کم نہیں

رضوان احمد

Freelance journalist Twitter account https://twitter.com/real_kumrati?s=09

اپنے خیالات کا اظہار کریں