نکاح کی اہمیت، مسنون طریقہ مسنون دعائیں |مولانا حافظ محمد احمد صاحب

‏نکاح کی اہمیت
مسنون طریقہ اور مسنون دعائیں

نکاح اور ازدواجی زندگی کو اللہ تعالیٰ نے قرآن مجید میں اپنی نشانی بتلایا ہے ، یہ واحد رشتہ ہے جس کو اللہ نے اپنی نشانی فرمایا
مفھوم آیۃ : اور اللہ کی نشانیوں میں سے یہ ہیکہ اللہ نے تمہارے واسطے تمہاری جنس کی بیویاں بنائ ہیں تاکہ تم ان سے سکون حاصل کرو اور اللہ نے میاں بیوی کے ما بین محبت اور ہمدردی پیدا کی
اسکے علاوہ بھی بیشتر آیات و احادیث میں نکاح کی اہمیت ہم سب پر اجاگر ہے
یاد رکھیں نارمل حالات میں نکاح کرنا سنت عمل ہے لیکن اگر انسان کو گناہ (زنا) کا خطرہ ہو تو نکاح کرنا فرض اور واجب ہو جاتا ہے
اگر فی الوقت نکاح کی استعداد نہیں ہے اور گناہ کا مرتکب ہونے ڈر ہو تو ایسے انسان کیلئے لازم ہیکہ وہ روزے رکھے تاکہ نفسانی خواہشات ٹوٹ جائیں لیکن انسان کو جلد از جلد کوشش کرکے نکاح کر لینا چاہیے
نکاح انتہائی آسان عمل ہے کیونکہ نکاح میں میاں بیوی کیلئے ایجاب و قبول مع مہر اور دو گواہوں کا ہونا ضروری ہے اور نکاح کے بعد حسب استطاعت ولیمہ کرنا مسنون عمل ہے
اسکے علاوہ تمام رسومات اور تمام شرائط کا نکاح سے کوئ تعلق نہیں بلکہ یہ ہماری خود ساختہ پریشانیاں ہیں جو ہم نے خود اپنے اوپر لازم کر کے نکاح کو مشکل ترین بنا دیا ہے
نکاح کے مشکل ہونے سے زنا کا عام ہونا عام فہم بات ہے کیونکہ نکاح ضروریات انسان میں سے ہے اور ضرورت ایجاد کی ماں ہے جب ضرورت مشکل ہوگی تو ضرورت کی جگہ اسکا متبادل سامنے آۓ گا
اس لیے کہتے ہیں کہ نکاح کو مسنون طریقہ سے کیا جاۓ تاکہ معاشرے میں نکاح آسان ہو جاۓ
معاشرتی بگاڑ کی وجوہات میں ایک وجہ نکاح کا مشکل ترین ہونا ہے
اگر نکاح اسلامی طرز سے ہوگا اور مسنون دعاؤں کے اہتمام کے ساتھ ہوگا تو وہ نکاح برکتوں کا باعث ہوگا
خصوصاً نکاح کے شب زفاف (سھاگ رات) کی مسنون دعاؤں کا اہتمام کرنا انتہائی باعث برکت ہے
یہاں ایک بات یاد رکھیں کہ شب زفاف میاں بیوی کیلئے انتہائی اہمیت کی حامل ہوتی ہے اس لیے اس رات کے متعلق دوسروں کو بتانا اور دوستوں سہیلیوں کے سامنے رات کا قصہ عیاں کرنا انتہائی برا اور قبیح عمل ہے
ایسا کرنا سخت گناہ ہے
اسیطرح دوستوں اور سہیلیوں یا رشتے داروں میاں بیوی سے شب زفاف کے متعلق اکسانا تاکہ وہ رات کا قصہ جان سکیں ایسا کرنا بھی گناہ ہے

شب زفاف میں مرد کو چاہیے کہ وہ بیوی کے پیشانی کے بالوں کو آرام سے پکڑ کر اللہ تعالیٰ خیر وبرکت کی دعا مانگے اور یہ دعا پڑھے
اَللّٰھمَّ اِنّی أَسئَلُکَ خَیرَھَا وَ خَیرَ ما جُبِلَتْ عَلَیہِ و اَعُوذُبِکَ مِن شَرِّھَا و شَرِّ مَا جُبِلَتْ عَلَیہِ
اور جس وقت صحبت کا ارادہ کرے تو یہ دعا پڑھے
بِسمِ اللہِ اَللّٰھُمَّ جَنِّبْنَا الشَّیطَانَ وَ جَنِّبِ الشَّیطَانَ مَا رَزَقتَنَا
پہلی دعا کی برکت سے ان شاءاللہ دونوں کے درمیان ہمدردی رہے گی اور دوسری دعا کی برکت سے اگر اولاد ہوئ تو نیک صالح ہوگی اور شیطان کے ضرر سے محفوظ ہوگی

شب زفاف کے بعد نمازِ فجر کا لازمی خیال رکھیں
مشاہدہ ہیکہ نماز فجر قضا ہو جاتی ہے حالانکہ نماز کی ادائیگی فرض ہے
اسیطرح دوران شادی تمام نمازوں کا اہتمام بھی ضروری ہے
آج کل دولہا اور دلہن بیوٹی پارلر سے مہنگا میک اپ کرواتے ہیں اور پھر وضو نا ہونے کی وجہ نمازوں کو ترک کر دیتے ہیں
حالانکہ نماز تو فرض عمل ہے

دوران شادی کچھ نا جائز کام رواج پا چکے ہیں جس میں گھر کے بڑے بھی یہ کہکر بخوشی شامل ہوتے ہیں بلکہ سربراہان ہی انتظام کرتے ہیں اور دلیل یہ دیتے ہیں کہ شادی خوشی کا موقع ہے اور یہ موقع بار بار نہی آتا اس لیے انجواۓ کے نام پر خرافات کرتے ہیں
حالانکہ ہماری بحیثیت مسلمان یہ سوچ ہونی چاہیے کہ شادی خوشی کا موقع اور یہ زندگی میں بار بار نہیں آتا اور ہماری زندگی تو ویسے بھی گناہوں میں مبتلا ہوتی ہے تو کم از کم ایسے خوشی کے مواقع تو اسلامی احکامات کے مطابق کرلیں یہ کونسا بار بار کرنے ہوتے ہیں

اصل میں ہمیں تنزلی اور پریشانیوں کی ایک بڑی وجہ یہ بھی ہیکہ ہم دکھاوے اور لوگوں کی باتوں سے بچنے غرض سے وہ کام بھی کرتے ہیں جو ہماری استطاعت نہیں ہوتے
سب سے بڑا روگ
کیا کہیں گے لوگ
اسلامی احکامات کو زندگی میں لائیں تاکہ نکاح آسان ہو جاۓ

اللہ تعالیٰ ہمیں دین کی صحیح سمجھ عطا فرمائے اور ہمیں مسنون اعمال کے مطابق زندگی گزارنے کا پابند بنا دے
اللہ تعالیٰ ہمیں رسومات خرافات سے بچاۓ
آمین یارب العالمین

والسلام : حافظ محمد احمد

Jabbli Views
فالو کریں

Jabbli Views

جبلی ویوز ایک میگزین ویب سائٹ ہے، یہ ایک ایسا ادارہ ہے جس کا مضمون نگاری اور کالم نگاری کو فروغ دینا اور اس شعبے سے منسلک ہونے والے نئے چہروں کو ایک پلیٹ فارم مہیا کرنا ہے،تاکہ وہ اپنے ہنر کو نکھار سکیں اور اپنے خیالات دوسروں تک پہنچا سکیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: