بلوچستان میں قدرتی گیس کے ذخائر دریافت روزانہ کتنی مقدار میں گیس حاصل کی جائیگی؟؟؟

‏1 خوشخبری 1 بری خبر کے ساتھ مثبت حکمت عملی….!!

بلوچستان کے ضلع کوہلو میں گیس کی دوسری دریافت سامنے آئی ہے. جس سے یومیہ 2.39 ملین کیوبک فٹ گیس حاصل ہوگی. OGDCL نے مئی میں کھدائی شروع کی تھی جو اکتوبر میں کامیاب ہوئی ہے.

ریسرچ کیمطابق یہاں 1 ٹریلین کیوبک فٹ گیس کے ذخائر ‏موجود ہیں. ایک بڑا کنواں پہلے ہی یومیہ 7 ملین کیوبک فٹ گیس مہیا کررہاہے. یاد رہے 🇵🇰 ضرورت کی 50 فیصد گیس خود نکال رہا ہے. لیکن اس میں سالانہ 9 فیصد کمی ہوجاتی ہے جسے چھوٹی چھوٹی دریافتوں سے پورا کیاجارہاہے.

اشتہارات


Qries

کیونکہ کوئی بڑی دریافت نہیں ہورہی. حکومت نے اس صورتحال کو مدنظر رکھتے ‏دیہاتوں میں نئے گیس کنکشنز نہ دینے کا فیصلہ کیا ہے. حکومتی ذرائع کے مطابق پاکستان جانوروں کے لحاظ سے دنیا کا چوتھا بڑا ملک ہے.

اگر انکے فضلے سے بائیو گیس بنائی جائے تو 3 کروڑ صارفین مستفید ہوسکتے ہیں. چونکہ دیہاتوں میں جانور بکثرت پائے جاتے ہیں اس لئے ایک مہم کا آغاز کیا جاےگا. ‏جسکے تحت ہر اس گھر کو قائل کیا جائے گا کہ وہ اپنا بائیو گیس پلانٹ لگاے جسکے پاس کم از کم 3 جانور ہیں. کیونکہ 3 جانوروں کا فضلہ اتنی گیس پیدا کرتا ہے کہ انکی ضرورت پوری ہوسکتی ہے. ایک بائیو گیس پلانٹ کی قیمت اس وقت 50 ہزار کے لگ بھگ ہے.

جس پر مزید کوئی خرچ نہیں آنا. جبکہ ایک گیس کنکشن کا مجموعی خرچ بھی اتنا ہی ہے. ایسے میں زیادہ جانوروں والے حضرات بائیو گیس بنانے کے عمل کو ایک بزنس کے طور پر بھی اپنا سکتے ہیں جو منافع بخش بھی ہے اور قدرے آسان بھی.

امید ہے حکومت جلد اس مہم کا آغاز کرے گی…..!!!

True Journalizm

Coloumnist | Blogger | Space Science Lover | IR Analyst | Social Servant Follow on twitter www.twitter.com/truejournalizm MSc Mass Communication

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: