پنجاب حکومت کا زبردست اقدام شہریوں کو پختون خواہ کے طرح صحت سہولت پروگرام دینے کا فیصلہ رقم مختص کرلی گئی

صوبہ پنجاب کیلئے 332 ارب کی ہیلتھ انشورنس کا منصوبہ

اشتہارات


Qries

موجودہ حکومت نے خیبر پختون خواہ کے بعد پنجاب بھر میں ہیلتھ کارڈز کی تقسیم ممکن بنانے کیلئے اقدامات شروع کردیئے ہیں. اس سلسلے میں سینٹرل ورکنگ ڈویلپمنٹ کمیٹی جو ایک وفاقی ادارہ ہے اور تمام پراجیکٹس کی ابتدائی منظوری ‏دیتا ہے.

332 ارب روپے کی ہیلتھ انشورنس کی منظوری دیدی ہے. یہ فائل اب ایکنک کے پاس جاے گی جو منصوبوں کی حتمی منظوری دینےکی سب سے بڑی اتھارٹی ہے. اس میگا منصوبے کے تحت سب سے بڑے صوبے کے تمام رہائشیوں کو سالانہ فی خاندان 10 لاکھ روپے کا بیلنس بذریعہ ہیلتھ کارڈ دیا جاے گا.

یہ سہولت. ‏2 ڈویژن جن میں ساہیوال اور ڈیرہ غازی خان شامل ہیں پہلے ہی دی جاچکی ہے جبکہ باقی 7 ڈویژنز میں بھی 31 مارچ 2022 سے مہیا کردی جاے گی.

اس کارڈ کی مدد سے صوبے کے تمام سرکاری و نجی ہسپتالوں میں تمام امراض ماسواے آوٹ ڈور کے علاج معالجے کی سہولت ہوگی.

یاد رہے پنجاب یہ سہولت اپنے بجٹ سے مہیا کرے گا. جیسے کہ خیبر پختون خواہ حکومت نے کیا جہاں 75 لاکھ خاندانوں کو سہولت میسر ہے.

بلوچستان حکومت نے بھی اعلان کر دیا تھا لیکن اب جام کمال مستعفی ہوچکے ہیں اس لئے عمل کب ہوگا؟ کہنا مشکل ہے. وفاق اپنے فنڈز سے وفاقی دارالحکومت میں یہ سہولت جنوری 2022 جبکہ گلگت بلتستان ‏میں 2023 سے فراہم کرے گا.

سندھ چونکہ NFC ایوارڈ کے تحت 1000 ارب روپے وصول کررہا ہے اس لئے لازم ہے کہ سہولت مہیا کرے لیکن محض بغض عمران خان میں سندھ کے شہری اس سہولت سے تاحال محروم ہیں. البتہ تھرپارکر میں مخدوش طبی سہولیات کے باعث وفاقی حکومت یہ سہولت پہلے ہی مہیا کرچکی ہے.

‏ٹروجرنلزم اس شاندار سہولت پر انتہائی خوش ہے کیونکہ ایک غریب آدمی خود سے کینسر دل گردے سمیت متعدد بڑی بیماریوں کا علاج نہیں کروا سکتا….!!

بلاول صاحب سے درخواست ہے کہ بھلے نام بدل دیں لیکن غریب شہریوں کو یہ سہولت ضرور مہیا کریں.

True Journalizm

Coloumnist | Blogger | Space Science Lover | IR Analyst | Social Servant Follow on twitter www.twitter.com/truejournalizm MSc Mass Communication

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: