اب کھیل جمے گا

اب کھیل جمے گا
پاکستان سپر لیگ سیزن نمبر سات کے شروعات میں اب صرف ایک دن رہتا ہے حسب سابق اس سیزن کے شروعات سے ہی لوگوں کی دلچسپی عروج پر ہے پی ایس ایل کا جادو سر چڑھ کر بول رہا ہے

پاکستان سپر لیگ کے ساتویں ایڈیشن میں بھی چھ ٹیمیں ایکشن میں نظر آئیں گی ملتان کے سلطانز ٹی ٹونٹی پلئیر آف د ائیر کے قیادت میں ٹائٹل کا دفاع کریں گے ان کا پہلا مقابلہ ہی ٹی ٹونٹی اور ون ڈے میں دنیا کے نمبر ون بیٹر ون ڈے کرکٹر اور ٹی ٹونٹی & ون ڈے کے کیپٹن آف د ائیر بابر اعظم کی قیادت میں کھیلنے والی ،چھٹے ایڈیشن کی فاتح ٹیم کراچی کنگز کے ساتھ ہوگا ملتان کے امیدوں کے محور محمد رضوان اور ہارڈ ہٹر صہیب مقصود ہوں گے تو کراچی کنگز کی ٹیم کپتان بابر، شرجیل خان، اور محمد عامر سے امیدیں جوڑے گی
لاہور کے قلندرزاس بار کرکٹر آف د ائیر نوجوان کھلاڑی مایہ ناز پیسر کے قیادت میں ٹائیٹل جیتنے کیلئے پروجوش ہیں ان کے امیدوں کے محور ہوں گے فخرزمان ، بین ڈنک، اورکپتان شاہین آفریدی ،

اب بات کرتے ہیں اسلام آباد یونائیٹڈ کی تو ان فارم شاداب خان نے وسیم جونئیر کو باقی ٹیموں کیلئے خطرے کی گھنٹی قرار دیا ہے وہیں حسن علی بیٹنگ اور باؤلنگ کے جوہر دکھانے کیلئے پرجوش ہیں تاہم اعظم خان اور آصف علی کی موجودگی کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا

کوئٹہ گلیڈیٹرز کی ٹیم اس بار زیادہ بیلنس نظر آرہی ہے کرکٹ کے آئیکن بوم بوم شاہد خان آفریدی جو اپنا آخری پی ایس ایل کوئٹہ کے طرف سے کھیلنے والے ہیں محمد نواز گھومتی ہوئی گیندوں سے کریں گے بلے بازوں کو پریشان تو ناممکن کو ممکن بنانے والے شاہد خان آفریدی آل راؤنڈر کارکردگی پی ایس ایل میں آخری بار دکھائیں گے

اب بات کرتے ہیں ٹورنامنٹ کی مشہور ترین فرنچائز پشاور زلمی کی اگر دیکھا جائے تو ہمیشہ کے طرح ان کے پاس بڑے نام تو نہیں ہیں لیکن ریزلٹ میں ہر بار یہ سرپرائز دیتے ہیں زلمی وہاب ریاض کی قیادت میں میدان میں اتریں گے لیکن ان کے مین کھلاڑی خپل کپتان وہاب ریاض سمیت کورونا کا شکار ہیں اسی وجہ سے اس ایڈیشن میں ابتدائی میچوں میں پشاور کیلئے مشکلات پیش آسکتی ہیں تاہم امام الحق اور حضرت اللہ زازئی کامران اکمل اور حیدرعلی کا بوجھ اٹھانے کیلئے. تیار ہیں کپتانی کا بوجھ پاکستان کے سابق کپتان شعیب ملک کے کندھوں پہ آسکتا ہے لونگ سٹن تو شائد شروعاتی میچوں کیلئے دستیاب ہی نہ ہوں

یہ ایڈیشن خاص کیوں ہے؟

گزشتہ سال پاکستانی کھلاڑیوں کے زبردست پرفارم کی وجہ سے اس بار کا پی ایس ایل بشمول انڈیا پوری دنیا میں دیکھا جائے گا انڈیا کا سونے سپورٹس آسٹرلیا کے فاکس سپورٹس افریقہ کے سپر سپورٹس اور انگلینڈ کے سکائی سپورٹس پوری دنیا میں پی ایس ایل دکھائیں گے علاوہ ازیں اس بار کا پی ایس ایل فل ایچ ڈی کوالٹی میں پی ٹی وی سپورٹس اور اے سپورٹس پر دکھایا جائے گا جس کے حقوق اے سپورٹس اور سرکاری ٹی وی چینل نے خرید لئے ہیں جبکہ اس ایڈیشن کی اوپنگ بھی وزیراعظم خان نے کی ہے اس لئے امید کی جارہی ہے کہ یہ ایڈیشن مقبولیت میں سابقہ ریکارڈز پاش پاش کرے گا

رکاوٹ

تاہم حسب سابق کورونا اس ایڈیشن پر اثرانداز ہوسکتا ہے زلمی کے کچھ کھلاڑیوں کا کورونا پازیٹیو بھی آیا ہے جن کا زکر میں اوپر کرچکا ہوں مگر اس بار پی سی بی انتظامیہ اور پی ایس ایل انتظامیہ نے سخت فیصلے لئے ہیں جیسے ایک ٹیم کے پاس کم از کم 13 بندے صحتیاب موجود ہوں اس وقت تک پی ایس ایل ملتوی نہیں ہوگا اگر اس سے کم بندے دستیاب ہوں تو پی ایس ایل ملتوی ہوگا وہ بھی ایک ہفتے کیلئے

تو جناب بتاتے چلیں کہ آپ کی فیورٹ ٹیم کونسی ہے اور آپ کیوں چاہیں گے کہ وہ ٹیم فاتح ٹہرے
آخر میں ہمیشہ کے طرح ملک خداداد میں امن کیلئے دعاگو ہوں اور کورونا وبا سے خلاصی اور پرامن طریقے سے ایونٹ کا آغاز واختتام ہو آمین

رضوان احمد

Freelance journalist Twitter account https://twitter.com/real_kumrati?s=09

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: