عمران خان نے لانگ مارچ کیوں ختم کیا؟؟ |رضوان احمد حقانی جبلی ویوز

دھرنا ڈی چوک کیوں پہنچا عمران خان کے خلاف توہین عدالت کا کیس دائر
گزشتہ روز عمران خان اپنے لانگ مارچ کو لیکر اسلام آباد پہنچے۔ وہاں ایک دن بھی نہ ٹھہر کر اپنے لانگ مارچ کو ختم کیا جس کے بارے میں مختلگ چہ مگویاں ہورہی ہیں مخالفین کا الزام ہے کہ لوگ عمران خان کے ساتھ نہ نکلے جس کی وجہ سے عمران خان کو دھرنا ختم کرنا پڑا۔ تاہم کچھ دانشوروں کا خیال ہے پولیس کا ظلم حد سے بڑھ گیا تھا لاٹھی چارج آنسو گیس کے شیل فائر کئے گئے مختلف حادثوں میں پانچ کارکن جان کی بازی ہارگئے۔ کچھ درختوں کو آگ لگائی گئی جس پر کچھ کہتے پولیس نے خود لگائی جبکہ کچھ کا خیال ہے کہ وہاں پر موجود کچھ شرپسند عناصر نے آگ لگائی۔
تاثر یہی ہے کہ عمران خان نے اپنے کارکنوں کو مزید ظلم سے بچانے کا فیصلہ کیا جبکہ کچھ لوگوں کا خیال ہے کہ عمران خان بجٹ تک انتظار کرنا چاہتے ہیں وہ چاہتے ہیں کہ یہ حکومت بجٹ پاس کرے کیونکہ نگران سیٹ اپ بجٹ پاس نہیں کرسکے گا اور یہ بات زیادہ معقول بھی لگتی ہے۔
دوسری جانب حکومت نے عمران خان کے خلاف توہین عدالت کا ریفرنس دائر کیا ہے حکومت کا مؤقف ہے کہ عدالت نے عمران خان کو ڈی چوک جانے سے منع کیا تھا وہ چلے گئے اس لئے وہ توہین عدالت کے مرتکب ہوئے ہیں جس پر سپریم کورٹ کا لارجر بینچ نے سماعت کے بعد نمٹادیا عدالت کے مطابق تحریک انصاف ایک ماہ میں 33 جلسے کرچکی ہے جو پرامن تھے عدالت کا حکم فریقین میں توازن کیلئے تھا

جبکہ رانا ثناء اللہ نے عدالت کے روکنے کے باوجود کارکنان پر بدترین تشدد کیا تاہم ان خلاف توہین عدالت کی کاروائی کا اب تک کوئی فیصلہ سامنے نہیں آیا۔ لیکن اس سب سے بڑھ کر عمران خان کو جو کامیابی ملی ہے وہ ایک تو مقبولیت کی بلندی ہے دوسرا انہوں نے یہ ثابت کیا ہے کہ پی ٹی آئی اب صرف برگر پارٹی نہیں رہی کیونکہ لوگ ہر طرح کا ظلم برداشت کرتے ہوئے بھی ڈٹ کر اپنے قائد کی آواز پر لبیک کہتے ہوئے اسلام آباد پہنچے۔

رضوان احمد

Freelance journalist Twitter account https://twitter.com/real_kumrati?s=09

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: