مینار پاکستان|جبلی ویوز

‏مینار پاکستان
یہاں 23 مارچ 1940 کو دو قومی نظریہ کی بنیاد پر برصغیر کے مسلمانوں نے الگ وطن کی قرار داد منظور کی. جو قرار داد پاکستان کہلائی. اس عظیم کوشش کی یاد میں 23 مارچ 1960 کو ٹھیک اسی جگہ ایک یادگار کی تعمیر شروع ہوئی. روسی نژاد پاکستانی انجنئر نصیر الدین نے 70 میٹر بلند اس نیشنل ٹاور آف پاکستان کا نقشہ تیار کیا اور ٹیکسلا سے بہترین پتھر منگوایا. 230 فٹ بلند یہ لبرٹی ٹاور 21 اکتوبر 1968 کو 70 لاکھ 58 ہزار روپے کی لاگت سے مکمل ہوا. یہ رقم مغربی پاکستان کے گورنر اختر حسین کے حکم پر سینما اور ہارس ریسنگ پر اضافی ٹیکس لگا کر اکٹھی کی گئی.

True Journalizm

Coloumnist | Blogger | Space Science Lover | IR Analyst | Social Servant Follow on twitter www.twitter.com/truejournalizm MSc Mass Communication

0 0 ووٹس
Article Rating
سبزکرائب
مطلع کریں
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
تمام کمنٹس دیکھیں
0
Would love your thoughts, please comment.x
%d bloggers like this: