نسیم شاہ اور وسیم نے پاکستان کی لاج رکھ لی

نسیم شاہ اور وسیم نے پاکستان کی عزت بچالی


پاکستان بمقابلہ نیدرلینڈ تیسرے اور آخری میچ میں ایک سنسنی خیز میچ میں نیدر لینڈز کو نو رنز سے شکست دیکر میچ اور سیریز تین ایک سے اپنے نام کی تفصیلات کے مطابق پاکستان بمقابلہ نیدرلینڈ تیسرے اور آخری میچ میں پاکستان کے کپتان بابراعظم نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا دوسرے ہی اور میں عبداللہ شفیق پولین لوٹ گئے فخر زمان نے بابر کے ساتھ دھیمے لہجے میں سکور کو آگے بڑھایا 26 کے انفرادی سکور پر فخر زمان ایک اونچے شارٹ کی کوشش میں کلین بولڈ ہوگئے آغا سلمان بابر کا ہاتھ بٹانے آگئے لیکن گیند اس کے بھی بلے پہ آنے سے انکاری تھی 24 کے انفرادی سکور پر وہ بھی چلتے بنے لیکن ایک سائیڈ کو کپتان نے سنبھالا ہوا تھا خوشدل شاہ محمد حارث یکے بعد دیگرے پچ پہ حاضری دے کر واپس چلے گئے کپتان بابر اعظم کا صبر بھی بیالسویں اور کے چوتھی گیند پر جواب دے گیا انہوں نے دو بلند وبالا چھکوں اور سات چوکوں کی مدد سے 91 رنز بنائے بدقسمتی سے وہ 100 پورے نہیں کرپائے 206 کے مجموعی سکور پر پوری ٹیم پولین لوٹ چکی تھی

اب امتحان تھا باؤلرز لیکن پہلے اور میں وکٹ اڑانے والے شاہین کہیں نظر نہیں آرہے تھے لیکن شاہین کی کمی نسیم شاہ نے محسوس ہونے نہیں دی کم عمر ضلع اپر دیر سے تعلق رکھنے والے نسیم شاہ نے پانچ وکٹ اڑائے جبکہ وزیر بوائے محمد وسیم کے حصے میں چار وکٹیں آئیں یاد رہے یہ وہی وسیم جونئیر ہیں جن کے سلیکشن پر کچھ لوگوں نے سوالات کی بوچھاڑ کی تھی پچاسویں اور کی پہلی بال پر چوکہ جڑکر بھارتی نژاد آریان دت نے پاکستان کی عزت خاک میں ملانے کے عزائم کا اظہار کیا 5 بالوں پر صرف دس رنز درکار نیدر لینڈ کے ہاتھ میں ایک ہی وکٹ تھی پاکستانی شائقین نا امید تھے کہ پاکستان جو کہ ٹیسٹ کھیلنے والا ملک ہے کمزور ٹیم کے سامنے اتنا بے بس کیوں؟؟ ہار گئے تو بھارتیوں کی ٹرولنگ کو برداشت کرنا ناممکن ہوجانا تھا وسیم کے ہاتھ میں گیند کے ساتھ ساتھ پاکستان کی عزت تھی وزیر بوائے نے فل ٹاس نشانہ سیدھے درمیانی سٹمپ کا باندھا اگلے ہی لمحے کپتان بابراعظم سمیت پوری ٹیم کے چہرے پر مسکراہٹ پھیل گئی وزیر بوائے نے پاکستان کی لاج رکھ لی درمیانی سٹمپ اکھٹ چکا تھا پاکستانی فینز کی خوشی دیدنی تھی ایک شرمناک ہار سے بچ گئے تھے میچ میں پانچ وکٹ اڑانے پر نسیم شاہ مین آف دی میچ قرار پائے اس سیریز میں بابر اعظم نے 222 رنز سکور کئے جبکہ نسیم شاہ نے 10 وکٹیں حاصل کیں تاہم پلئیر آف دی سیریز کا ایوارڈ کسی کو نہیں ملا

رضوان احمد

رضوان احمد

Freelance journalist Twitter account https://twitter.com/real_kumrati?s=09

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: