پاکستان میں قدرتی گیس کے ذخائر دریافت لیکن وہ ناکافی ہیں |جبلی ویوز

‏گیس کی نئی دریافت لیکن ناکافی

ٹریبون کیمطابق کوہاٹ میں تولنج بلاک میں گیس کی نئی دریافت ہوئی ہے. یومیہ 2.2 ایم ایم سی ایف ٹی گیس حاصل ہونیکی توقع ہے. ریسرچ آفیسر طاہرعباس کیمطابق ملک میں توانائی کی پیداوار میں تیزی سے کمی جبکہ کھپت میں اضافہ ہورہاہے. 3 سال پہلے گیس کی یومیہ پیداوار 4 ملین ‏مکعب فٹ تھی جو اب 33 ملین مکعب فٹ رہ گئی ہے. جبکہ یومیہ کھپت 8 ہزار ملین مکعب فٹ ہے. سالانہ 10 سے 15 فیصد کی گراوٹ ہورہی ہے. 1952 میں سوئی اور 2006 میں ٹل بلاک کے میگا ذخیروں کی دریافت کے بعد کوئی بڑا ذخیرہ ابھی تک دریافت نہیں ہوا. دوسری طرف 3 سال پہلے خام تیل کی یومیہ پیداوار ‏90 ہزار بیرل تھی جو اب 70 ہزار بیرل پہ آگئی ہے. جبکہ یومیہ کھپت 7 لاکھ بیرل ہے. اسی لئے گزشتہ مالی سال میں 80 ارب ڈالر کی درآمدات میں 25 ارب ڈالر صرف توانائی کی ضروریات پوری کرنے میں لگ گئے. طاہر شاہ کا مزید کہناتھا کہ حکومت توانائی کمپنیوں کی 700 ارب روپے کی مقروض ہے. جنکی عدم ‏ادائیگی کمپنیوں کو نئی کھدائیاں کرنے سے روک رہی ہے. کیونکہ اخراجات کی مد میں کمپنیاں براہ راست قرض لے رہی ہیں جسکی وجہ سے گردشی قرضہ دن بدن بڑھتا جا رہا ہے.

True Journalizm

Coloumnist | Blogger | Space Science Lover | IR Analyst | Social Servant Follow on twitter www.twitter.com/truejournalizm MSc Mass Communication

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: