خیبر پختون خواہ حکومت کا بڑا کارنامہ

خیبرپختونخوا نے نویں سے بارہویں جماعت تک قرآن پاک کا مطالعہ لازمی قرار دے دیا۔

خیبرپختونخوا کی حکومت نے نویں سے بارہویں جماعت کے تمام طلباء کے لیے قرآن کی لازمی تعلیم کا نوٹیفکیشن جاری کیا ہے۔ یہ حکم پشاور ہائی کورٹ کے فیصلے کے تناظر میں کیا گیا ہے۔

2023 میں میٹرک، ایف اے اور ایف ایس سی کے امتحانات میں 75 نمبرز کا اضافہ کیا جائے گا جس سے میٹرک اور انٹر کے امتحانات کے کل نمبر 1100 سے 1225 ہو جائیں گے۔

اقلیتوں کو بھی اخلاقیات کا کورس کرنے کی ضرورت تھی۔ نویں اور بارہویں جماعت میں یہ اقلیتوں سے تعلق رکھنے والے بچوں کے لیے لازمی ہوگا۔ قرآن مجید کی تعلیم کے اضافے سے لازمی پرچوں کی تعداد اب پانچ ہو گئی ہے۔

2023 میں میٹرک اور داخلہ کے امتحانات میں شامل کرنے کے لیے ڈائریکٹوریٹ آف ایجوکیشن سے 75 نمبروں کا پرچہ بھی طلب کیا گیا ہے۔ مزید برآں، محکمہ تعلیم نے قرآن کی کلاسز شروع کرنے کے لیے کالجوں کو سفارشات بھیجی ہیں اور محکمہ ہائر ایجوکیشن کو حکم دیا ہے کہ وہ اس فیصلے پر عمل درآمد کرے۔

پورے خیبرپختونخوا میں پرائمری سے آٹھویں جماعت تک قرآن پاک پڑھایا جاتا ہے۔ پشاور ہائی کورٹ میں ایک اپیل دائر کی گئی تھی جس میں استدعا کی گئی تھی کہ اسے لازمی مضمون کے طور پر پڑھایا جائے اور امتحان بھی لیا جائے۔

Syed Moin uddin Shah

Syed Moin uddin Shah Ms. Management Sciences Islamia University Bahawalpur Follow his Twitter account http://twitter.com/BukhariM9‎

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: