گھڑی کا خریدار لانچ ہونے سے پہلے ہی ایکسپوز

توشہ خانہ کیس میں گھڑی کا خریدار بناکر ایک ایف آئی اے کو مطلوب سمگلر کو ٹی وی پہ بٹھائے جانے والا عمر فاروق ظہور کو لانچ کرنے سے پہلے ہی تحریک انصاف سوشل میڈیا ایکٹوسٹس نے ایکسپوز کردیا سارے تفصیلات سامنے لے آئے اس سمگلر کے کیس کے بارے میں مرحوم ارشد شریف پہلے ہی لکھ چکے تھے


مبینہ شخص کو میڈیا پر لانے کے بعد تحریک انصاف کا مؤقف بھی سامنے آگیا ہے
تفصیلات کے مطابق سابق وزیراطلاعات فواد چوہدری نے کہا ” جب عمران خان ہر کوئ کیس نہیں ملا تو کیس یہ بنایا گیا کہ سعودی عرب کے بادشاہ نے عمران خان کو مہنگی گھڑی تحفے میں ی وہ گھڑی روزہ خانی سے خرید کر مہنگے دانوں مارکیٹ میں فروخت کر دی گئ، سب سے پہلے تو یہ کہ پانچ ملین ڈالر کی گھڑی کبھی کسی بھی وزیر اعظم کو تحفہ نہیں دی گئ جب بیرون ملک دورے میں ایک تحفہ ملتا ہے تو وہ وزارت خارجہ کا پروٹوکول آفیسر وصول کرتا ہے اور وہ وطن واپسی پر روزہ خانہ میں جمع کرا کر اس کی رسید متعلقہ ڈیپارٹمنٹ میں جمع کرواتا ہے۔ توشہ خانہ کیبینٹ ڈویژن کے ماتحت ہے، یہاں ایک آزاد کمیٹی رولز کے مطابق اس تحفے کی قیمت طے کرتی ہے، جو مارکیٹ کی قیمت طے ہوتی ہے اس سے متعلقہ وزیر یا آل وزیر اعظم کو آگاہ کیا جاتا ہے
عمران خان حکومت سے پہلے رولز کے مطابق اس قیمت کا 25% ادا کر کے وہ تحفہ ذاتی ملکیت میں لیا جا سکتا تھا تحریک انصاف نے اس شرح کو پچاس فیصد تک بڑھا دیا، یعنی قانون کے مطابق جس شخص کو تحفہ ملا ہے وہ اس تحفے کی قیمت کا پچاس فیصد ادا کرکے تحفہ ذاتی ملکیت میں لے سکتا ہے عمران خان نے توشہ خانہ سے اس قانون کے مطابق گھڑی خریدی اور یہ گھڑی ان کی ٹیکس ریٹرن اور الیکشن کمیشن کے گوشواروں میں ڈیکلیئرڈ ہے، جنگ/جیو گروپ نے جس شخص کو خریدار بنا کر پیش کیا نہ تو اسے کبھی گھڑی فروخت کی گئ نہ ہی اس شخص کا عمران خان سے بالواسطہ یا بلاواسطہ کوئی تعلق ہے،”

رضوان احمد

Freelance journalist Twitter account https://twitter.com/real_kumrati?s=09

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: