پختون خواہ سب سے آگے صحت کارڈ کے متعلق پختون خواہ حکومت کا بڑا اعلان

انصاف صحت کارڈ بلاشبہ عمران خان حکومت کا بڑا کارنامہ ہے جس پر ایک مریض سالانہ دس لاکھ تک کا مفت علاج کروا سکتا ہے 2013 میں خیبرپختونخوا میں حکومت سنبھالنے کی بعد سابق وزیر اعلیٰ پرویز خٹک نے پختونخواہ میں صحت کارڈ متعارف کروایا جو 2018 تک تقریباً نصف آبادی کو مل چکا تھا 2018 میں دوبارہ تحریک انصاف کی حکومت آئی تو وزیراعلی پختونخوا محمود خان نے پوری آبادی کیلئے صحت کارڈ جاری کردئیے اب پختونخواہ کی 100ابادی صحت سہولت پروگرام سے فائیدہ اٹھارہی ہے
پختونخوا کی موجودہ حکومت نے صحت کارڈ کے متعلق بڑا اعلان کرتے ہوئے میڈیسن بھی صحت کارڈ کے ذریعے دینے کا اعلان کیا ہے صحت کارڈ سے اب تک ان مریضوں کا علاج کیا جاتا جو ہسپتال میں داخل ہوتے تاہم اب شوگر اور امراض قلب کی جاری ادویہ بھی صحت کارڈ کے ذریعے ملیں گی

رضوان احمد

Freelance journalist Twitter account https://twitter.com/real_kumrati?s=09

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: