نہ زمین پھٹی نہ آسمان

‏تحریر: حکم خان / شہر : دوبئی متحدہ رب امارات
Twitter: ‎@Khanhukam1
عنوان: نہ زمین پھٹی نہ اسمان پھٹا

یہ/2014 2013 کی بات ہے کہ میں سعودی عرب میں اپنے آفس میں بیٹھا ہوا تھا اور چائے پی رہا تھا ویسے صبح کے ٹائم میں چائے کا ایک اپنا مزہ ہوتا ہے خیر اسی دوران مجھے ایک واٹس ایپ ایک پیغام موصول ہوا جو میرا پارٹنر تھا میں نے اس میسج کو اگنور کیا کہ خیر بعد میں پڑھ لونگا پھر میں کام میں مشغول ہوگیا اور میں بھول گیا اسی دوران میرا پارٹنر بھی پہنچ گیا حسب معمولات ان سے گپ شپ کی اس نے کہا اپ کو کچھ دیر پہلے ایک میسج بھیجا پڑا میں نے نفی میں سر ہلایا تو اس نے کہا کہ اپ کو نہیں معلوم سرگودھا میں بھائی نے بہن سے شادی کرلی میں یہ سنتے ہی میرے رونگٹے کھڑے ہوگئے یقین کریں یہ میرے زندگی کا پہلا واقع تھا کھبی سوچ میں بھی نہیں تھا کہ اسیا بھی ہو سکتا ہے خیر میں نے جب سوشل میڈیا پر دیکھا تو خبر ٹھیک تھی میں نے ایک لمحے سوچا کہ پتا نہیں یہ کونسی مخلوق ہے جس میں رشتوں کا تقدس نہیں۔


وقت گزرتا گیا اور پھر دن میں کئی کئی کیس درج ہوتے رہے کسی جگہ پر باپ نے بیٹی کی عزت لوٹ لی ، تو کسی جگہ پر بیٹے نے ماں کی عزت لوٹ لی اللہ کی قسم ہم ایسے حیوان بن گئے کہ ہم نے خونی رشتوں کو بھی نہیں بخشا۔ ابھی پچھلے مہینے کی بات ہے ایک نیوز پیر پر نظر پڑھی دیکھا کہ چارسدہ میں باپ اپنی بیٹی کو ۹ مہینوں تک زیادتی کا نشانہ بناتا رہا میں سوچ رہا ہوں کہ یہ تو میرے رب کا کرم ہے اس نبی کی خاطر جس کو تمام دنیا کے لئے رحمت العالمین بھیجا اس شان کی دعا تھی کہ اے اللہ میرے امت کو ایک ساتھ ہلاک نہیں کرنا، میرے امت کے شکلوں کو نہیں بگاڑنا۔ شکر ہے میرے نبی کی دعا قبول ہوگئ ورنہ پچھلے قومیں کیسے تباہ ہوئی کھبی اس کے بارے میں ہم نے کوئی جانچ کیا قوم لوط، کیسے تباہ ہوئی قوم لوط میں تو بس ایک ہی گناہ زیادہ تھا اور اللہ نے تباہ کیا ہم تو اس سے ۱۰۰ ہاتھ اگے نکل گئے ہیں اس ماں کو جس کے قدموں تلے اللہ نے جنت رکھی اس کو نہیں بخشا اس بہن کو جس کے بارے میں

حدیث میں اتا ہے
حدیث شریف ہے جس کا ترجمہ ہے:’ابوسعید خدری ؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے ارشادفرمایا:جس کے پاس تین لڑکیاں،یا تین بہنیں، یادولڑکیاں،یادوبہنیں ہوں اور وہ ان کے ساتھ اچھا سلوک کرے اور ان کے حقوق کے سلسلے میں اللہ سے ڈرے تو اس کیلئے جنت ہے‘۔
سنن ترمذی(حدیث نمبر:1916)


ماں رشتے کو بھی ہم نے نہیں چھوڑا شکر ہے اس رب کا کہ نبی

ﷺ کی دعا کی بدولت ہمارے ماتھے پر گناہ نہیں لکھے جاتے ورنہ ہم اج کسی کو بھی منہ دکھانے کے لائق نہیں ہوتے، شکر ہے اس رب کا کہ ہماری شکلیں نہیں بگاڑتا ورنہ اج سارے جان وروں کی طرح گھومتے۔

اس قسم کے واقعات سے بس بچنے کا ایک ہی راستہ ہے کہ ہم ہر وقت وضو میں رہیں، اپنی نگاہوں کی نیچے رکھا کریں اور کثرت سے استغفار کریں توبہ کریں اور اللہ سے معافی مانگیں ورنہ وہ وقت دور نہیں جب ہم پر بھی اسمان سے پھتر برسائیں جائیں۔
اللہ سے دعا ہے کہ وہ ہم سب مسلمانوں کو چھوٹی اور بڑی گناہوں سے محفوظ رکھیں ۔
امین

Jabbli Views
فالو کریں

Jabbli Views

جبلی ویوز ایک میگزین ویب سائٹ ہے، یہ ایک ایسا ادارہ ہے جس کا مضمون نگاری اور کالم نگاری کو فروغ دینا اور اس شعبے سے منسلک ہونے والے نئے چہروں کو ایک پلیٹ فارم مہیا کرنا ہے،تاکہ وہ اپنے ہنر کو نکھار سکیں اور اپنے خیالات دوسروں تک پہنچا سکیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: